اردو میں  باضابطہ طور پر تحقیق کا آغاز محمود شیرانی سے ہوتا ہے۔ انھیں  تحقیق کا معلّم اوّل کہا جاتا ہے۔ شیرانی صاحب نے پہلی بار تحقیق میں  غیر جذباتی اندازِ نظر کی ضرورت کا احساس دلایا۔